پاکستان کے لیے شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس اہم کیوں؟،رواں برس تنظیم کا ایجنڈا کیا ہے؟

اسلام آباد(رم نیوز)پاکستان کے لئے شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس بہت اہم ہے۔ اس اجلاس میں عالمی رہنمائوں کی توجہ اہم امور کی طرف دلائی جائے گی۔سربراہی اجلاس میں خطے کے رکن ممالک کے درمیان تجارتی روابط مضبوط کرنے پر بات چیت ہو گی۔ شنگھائی تعاون تنظیم کے مقاصد میں شامل ہے کہ 2030 تک رکن ممالک کے مابین معاشی و تجارتی تعلقات مضبوط ہو جائیں ۔ ایشیائی خطے میں امن کا قیام اور سکیورٹی سے متعلق خدشات کو دور کرنا بھی شامل ہے۔ چین اور روس کے درمیان یوکرین جنگ اور اس کے بعد خطے اور عالمی دنیا میں پیدا ہونے والے اثرات پر بھی بات ہوگی ۔

شنگھائی تعاون تنظیم جنوبی اور وسطی ایشیا میں ایک بڑی تنظیم ہے۔ابتدائی اراکین میں چین، روس، قزاقستان، کرغستان اور تاجکستان شامل تھے۔ 2001 میں جب ازبکستان شامل ہوا تو اس کا نام شنگھائی فائیو سے تبدیل کر کے ایس سی او رکھاگیا تھا۔ پاکستان کے لیے بہت اہم ہے تباہ کن سیلاب اور موسمیاتی تبدیلی کے اثرات سے پیدا ہونے والی صورت حال پر بڑے ممالک تعاون کریں۔ موسمیاتی تبدیلی اس اجلاس کا ایجنڈا ہے۔حالیہ دنوں میں پاکستان میں غیرمعمولی بارشوں اور سیلاب سے تباہی پر بھی بات ہونے کا امکان ہے ۔پاکستان کی یہ بھی توقعات ہیں افغانستان میں پیدا ہونے والے انسانی بحران کا حل نکلے تاکہ باقی ممالک پر اس کے منفی اثرات مرتب نہ ہوں۔ خطے میں موجود رکن ممالک کے مابین تجارتی روابط پر بھی پاکستان اپنا نقطہ نظر بیان کرے گا۔