پاک انگلینڈ ٹی ٹوینٹی سیریز۔۔۔۔دونوں ٹیموں کی تیاری بھرپور۔۔۔جوش وخروش عروج پر

کراچی(رم نیوز)پاک انگلینڈ ٹی ٹوینٹی سیریز کے لئے دونوں ٹیموں نے بھرپور تیاری کرلی ہے اور جوش وخروش عروج پر ہے۔ دونوں ٹیمیں اس ٹورنامنٹ میں بہترین پرفارمنس دکھانا چاہتی ہیں۔ دونوں ٹیمیں ایک دوسرے کی صلاحیتیں آزمانے کو تیار ہیں ۔پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان 7 ٹی ٹوینٹی میچز کی سیریز کل سے شروع ہورہی ہے۔

پاکستان کے بائولنگ کوچ شان ٹیٹ کا کہنا ہے کہ میزبان ٹیم کے پاس دنیا کے بہترین اور باصلاحیت فاسٹ بائولرز ہیں۔ میرے پاکستانی بائولرز کے ساتھ اچھے تعلقات ہیں، پاکستان ٹیم کے ساتھ کام کرنا ایک اچھا تجربہ ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ٹی ٹوینٹی سیریز ہونے کے ناطے فطری طور پر وکٹ بیٹنگ کیلئے اچھی ہوگی۔ مجھے نہیں لگتا کہ دوران مقابلہ پچ کوئی خاص سرپرائز دے ۔مجھے اندازہ ہے کہ فاسٹ بائولر کو جب کریمپس ہوتے ہیں تو کتنا درد ہوتا ہے۔میں نسیم شاہ میں اپنی جوانی دیکھتا ہوں

جوز بٹلر کی جگہ کپتانی کے فرائض سرانجام دینے والے معین علی کا کہنا تھاپاکستان کے دورے پر آئی ہماری ٹیم کو ہر گز بی سائیڈ نہیں قرار دیا جاسکتاہے۔سکواڈ میں شامل نئے کھلاڑیوں کے لیے خود کو منوانے کا بہترین موقع ہے۔دونوں ٹیمیں سپنرز کوکھیلنے کی بہترین صلاحـیت رکھتی ہیں۔ ہمارے کئی کھلاڑی انجری کا شکار ہیں۔ اس کے باوجود ہم سمجھتے ہیں کہ دیگر کھلاڑی باصلاحیت ہیں۔جوز بٹلر ساری سیریز سے آئوٹ ہیں یا کچھ میچز کے لئے باہر ہوئے ہیں، اس بارے میں کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے۔ پاکستان کے پاس اچھے سپنرز ہیں لیکن دونوں ٹیموں میں سپن بائولنگ کو بہترین طریقے سے کھیلنے کی صلاحیت ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیے خدمات انجام دینے والے ثقلین مشتاق جب ہمارے کوچ تھے تو ہم نے ان سے بہت کچھ سیکھا۔انہوں نے کہا کہ سترہ برس بعد ہماری ٹیم آئی ہے۔ دونوں ممالک کے شائقین کواچھی کرکٹ دیکھنے کو ملے گی۔